کرفیو اور پابندیوں کے باعث وادی کشمیرمیں مقامی معیشت کو ایک ارب ڈالرکا نقصان ہوا، برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ

سرینگر مقبوضہ کشمیرمیں کرفیو اورپابندیاں 66 ویں روزمیں داخل ہوگئیں، لاک ڈاون کے باعث کشمیریوں کو شدیدمشکلات کاسامناہے جبکہ کاروباری سرگرمیاں جمود کا شکارہیں۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق کرفیو اورپابندیوں کے باعث اب تک مقامی معیشت کو ایک ارب ڈالرکانقصان ہوچکا ہے،ہزاروں لوگ بیروگارہوچکے ہیں، سیاحت، قالین بافی سمیت متعددصنعتیں متاثرہورہی ہیں،کشمیر ی تاجرکے مطابق قالین کی صنعت زوال پذیرہونے سے تقریباپچاس ہزارلوگ بیروزگارہوچکے ہیں، مواصلاتی نظام کی بندش سے ملازمین سے رابطہ ممکن نہیں۔0:00/0:00Skip in 50:00/0:00Skip in 5رپورٹ کے مطابق جنوبی کشمیر کے مشہورسیب ابھی تک باغوں سے نہیں اتارے جاسکے ہیں، دکانیں، کولڈسٹوربند ہیں جبکہ مرکزی منڈیاں ویرانی کامنظرپیش کررہی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں