پٹرول پر 7 ارب کا ٹیکا لگا دیا گیا،عبد القادر بلوچ

پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنما عبدالقادر پٹیل نے قومی اسمبلی میں کٹوتی کی تحاریک پر بحث کرتے ہوئے کہا کہ سات ارب روپے کا پٹرول پر ٹیکا لگا گیا ہے ،ایف آئی اے کا کام ہے کہ معلوم کرے کہ کون لوگ تھے جنھوں نے سستا پیٹرول اکھٹا کیااور اب مہنگا پیٹرول بیچ رہے ہیں ایف آئی اے کو معلوم کرانا چاہیے کہ مافیا کے پیچھے کون ہے ، ان کے حصہ دار کون ہیں انہوں نے کہا کہ سہیل ایاز ایف آئی اے کے حوالے ہوا تھا، اس نے تیس بچوں کا ریپ کیا ،سہیل ایاز کی تحقیقات آج تک ایف آئی اے نے نہیں کی انہوں نے کہا کہ سہیل ایاز جس نے 30 بچوں سے زیادتی کر کے ویڈیوز ڈارک ویب پر ڈالی ۔ایف آئی اے نے اب تک نہیں بتایا کہ سہیل ایاز کو کے پی کے میں نوکری کس نے دی۔انہوں نے کہا کہ امید ہے بی آر ٹی قیامت تک مکمل ہو جائے گی ،ایک وزیر ایک کروڑ کے پکوڑے کھا گئے تھے ، بل ابھی بھی کراچی پورٹ ٹرسٹ میں پڑا ہے،لوگ بات کر رہے ہیں کہ معاملہ مک گیا ہے انہوں نے کہا کہ عام طور پر اپوزیشن چاہتی ہے کہ حکومت چلی جائے یہ واحد حکومت ہے کہ اپوزیشن چاہتی ہے کہ یہ بیٹھ کر حکومت کرے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں