سیریئن ڈیموکریٹک فورسز کے ترک فوج پر جوابی حملے

شام میں ترکی کی فوجی کارروائی کے بعد سیریئن ڈیموکریٹک فورسز نے ترک فوج پر جوابی حملے کیے ہیں۔ ایک ویڈیو فوٹیج کے مطابق ڈیموکریٹک فورسزکی طرف سے ترک فوج پر ہاون راکٹوں سے حملے کیے جا رہے ہیں۔ترکی کی جانب سے شام میں فوجی کارروائی شروع ہونے کے بعد عرب ٹی وی ایک فوٹیج موصول ہوئی جس میں ترک فوج کے مارٹر گولوں کے جواب میں شامی ڈیموکریٹک فورسز کی طرف سے ہاون راکٹوں کا استعمال دیکھا جا سکتا ہے۔خبر رساں ایجنسی اناطولیہ کے مطابق، شام کے شہر قامیشلی سے ترکی کے سرحدی شہر نصیببن کے قلب میں داغے گئے 6 راکٹوں کے گرے ہیں۔ادھر این ٹی وی نے اطلاع دی ہے کہ متعدد مارٹر گولے ترکی کے شہر نصیبین کے علاقے جیلان پینار میں گرے تاہم ان میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا۔ترکی کے ایک سیکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ ہاوٹزر طرز کی توپوں سے کرد پروٹیکشن یونٹس کے زیر استعمال گولہ بارود ڈپووں پر بمباری کی جا رہی ہے۔ نیز توپ خانے سے پروٹیکشن یونٹس کو بھی نشانہ بنایا جا رہا ہے۔شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق کے مطابق ترک جنگی طیاروں نے شمالی شام کے سرحدی علاقے راس العین پر بدھ کے روز بمباری شروع کردی ہے۔ترک صدر رجب طیب ایردوآن کی ہدایت پر شروع کیے گئے آپریشن کے نتیجے میں شام میں بڑی تعداد میں شہریوں نے نقل مکانی شروع کی ہے۔ دوسری طرف عالمی سطح پر اس آپریشن پر شدید تنقید کے ساتھ اسے فوری طور پر بند کرنے کا مطالبہ زور پکڑ رہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں