‘اگر مجھےگرفتار کیاگیا تو میں نظر بندی سے مارچ کی قیادت کروں گا’

اسلام آباد:جمعیت علما ءاسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کاکہنا ہے کہ آزادی مارچ ہر صورت ہوگا،اگر انہیں گرفتار کیاگیا تو وہ نظر بندی سے مارچ کی قیادت کریں گے۔جے یو آئی ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے جمعیت علماء پاکستان کےمرکزی صدر پیر اعجاز ہاشمی سے ملاقات کی۔بعدازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ جعلی حکومت کو گھر جانا ہوگا،جعلی وزیر اعظم اقوام متحدہ میں کشمیر کا مقدمہ نہیں لڑ سکتا،عالمی طاقتیں کشمیر کے مسئلے پر ہمارے ساتھ نہیں۔جے یو آئی سربراہ کاکہناتھاکہ شیخ رشید نے آزادی مارچ پر کوئی پیغام بھیجا نہ کوئی بات ہوئی ۔پیپلز پارٹی اور ن لیگ سمیت تمام سیاسی جماعتیں جمہوریت اور آزادی مارچ پر متفق اور رابطےمیں ہیں،حکومت کے جانے کا وقت قریب ہے۔
جمعیت علما پاکستان کے مرکزی صدر پیر اعجاز ہاشمی نےمولانافضل الرحمان کے آزادی مارچ کی مکمل حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ نئے پاکستان میں ہرایک پابندی سے لاوا پھٹے گا ،اس لئے آزادی مارچ امن وامان کےلیے ناگزیر ہو چکا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں